جواب اچھا ہے


شعر کا انتخاب تو اچھا ہی تھا لیکن
مری بات کا ادھورا جواب اچھا ہے

داد ہے نہ ہی خوشامد کویؑ لیکن
نظم کا اتنا روکھا جواب اچھا ہے

پھانس کر اپنی محبت میں مجھے
پیار میں اتنا ٹیڑھا جواب اچھا ہے

میری ہستی مکمل رکھنا یاد ہے
مجھے اب تیرا کورا جواب اچھا ہے

پلٹ کر نہ دیکھا تم نے کبھی
بھٹکتا ہے تسخیر میں سوکھا جواب اچھا ہے

کون اور کب ملا کیسے چھوڑ گیا وہ سب
مجھے کچھ یاد نہیں سوال و جواب اچھا ہے

شعر کیسا مظہر نہ ہے بحر نہ کویؑ زمیں
ماہ جبیں ہے اس کا ٹکا سا جواب اچھا ہے

 

Poetry

 

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this:
search previous next tag category expand menu location phone mail time cart zoom edit close