” حقیقت یہ ہے “


حقیقت یہ ہے کہ یہ طلب خدا کی طلب ہے۔

آدمی جس آئیڈیل کو پانے کے لئے بے قرار رہتا ہے وہ خود اس کا خالق ہے۔ ہر آدمی جس چیز کی تلاش میں ہے وہ دراصل وہ خدا ہے جو اس کی روح میں سمایا ہوا ہے۔ ہر آدمی اپنی فطرت کےتحت مسلسل خدا کی جستجو میں رہتا ہے وہ اپنے اس اندرونی جزبہ کے تحت دنیاکی مختلف چیزوں کی طرف دوڑتا ہے اور سمجھتا ہے کہ شاید یہ چیز کی تلاش کا جواب ہو۔ مگر جب وہ اس کو پا لیتا ہے اور قریب سے اس کا تجزیہ کرتا ہے تو اس کو معلوم ہوتا ہے کہ یہ چیز وہ نہیںجس کی تلاش میں وہ سرگرداں تھا اور حقیقت میں وہی عشق و محبت ہے، جس کو سب محسوس کرتے ہیں مگروہ نہیں مل پاتا، اور شیطان لعین، کے ہتھے چڑھ جاتے ہیں اور اپنی عاقبت گنوا بیٹھتے ہیں۔۔۔۔
ذرا سوچ میں تبدیلی لاکر تو دیکھیے۔۔۔۔
ﷲپاک تو بڑے ہی نہایت رحم والے ہیں ۔

Article

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: