” کرپشن “


ٖ
خون کی جگہ نس نس میں جن کی رواں ہے لہو غریب کا

خون بھی پی گےؑ نچوڑ کے پھر بولے یہ کرپشن نہیں ہے

جانتے ہیں خوب کس نے کتنی کی ہے کرپشن

قانون بھی لنگڑا سمجھے پھر بولے یہ کرپشن نہیں ہے

ٖ جاگ جاؤ کہیں نگل ہی نہ جاےؑ ہم سب کو یہ سانپ

ڈس چکا پوری قوم کو جو پھر بولے یہ کرپشن نہیں ہے

 

Poetry

 

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

w

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: