” الظلم “


کیسی ہے ہماری قسمت اور کیسے ہیں نصیب ہمارے
ایک خبر جگر تک چھلنی کرتی ہے ابھی زخم بھرتے نہیں
ایک اور آ جاتی ہے آج بھی ایک اور خبر چل رہی ہے
ہم آپ سب کی طرح تو اعلیٰ ادبیات نہیں جانتے لیکن آپ
سب تک اپنے احساسات کو پہنچانے کے لےؑ لفظون کا سہارا
لینے کی کوشش کرتے ہیں ، عرض ہے کہ

جھوٹا دوجے جھوٹے کو خوش کر گیا یوں فیصلہ سنا کے

محبت میں پورا تولنے والے کو ہی مجرم ٹھہرا کے

 

Poetry

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

w

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: