” ماں تجھے سلام “


” ماں تجھے سلام “

جہاں ہوں ناں میں گھر سے نکلتے ہوئے گیٹ میں سے جھانکتے ہوئے دور بہت دور تک جاتے ہوےؑ .جہاں تک میں نظر آ سکتا ہوں ناں ، وہاں تک جاتےاب کوئی نہیں دیکھتا اور نہ کوئی میرے لےؑ واپسی میں کویؑ انتظار کرتا ہے کویؑ نہیں کسی کو اٹھاتا ، کویؑ نہیں کہتا کہ دیکھو باہر سے تھک کے آیا ہے اٹھ کے کھنا تازہ بنا کے دینا اسے ۔۔۔۔۔۔ کچھ بھی نیا خریدوں کویؑ نہیں یہاں جو مجھے مبارک باد کے دو بول ہی دے سکے بس ۔۔۔

تجھ سے دور پردیس میں رہنا بھی

جہنم سے کم تو نہیں ہے ” ماں “

Poetry

 

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: