بِسْمِ اللّہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ


بِسْمِ اللّہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

جب کویؑ شاعر اپنا کلام لکھتا ہے تو جس شعر کی کسی کو سمجھ آتی ہے اس پر خوب داد بھی دی جاتی ہے لیکن جو شعر پہلے سے بھی اچھا لکھا جاتا ہے وہ چونکہ لوگوں کی سمجھ میں نہیں آتا اس لےؑ اس پر داد کم ہی دی جاتی ہے ،
بلکل اسی طرح وہ واقعہ جس میں امت کے لےؑ نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم نے مغفرت مانگی تھی اس کو پڑھکر بھی ہر شخص یہ خوب جان جاتا ہے کہ ہمارے لےؑ کس قدر بخشش مانگی گیؑ اور اسکا ہم آج انکا شکر کس قدر ادا کر رہے ہیں یہ کویؑ کہنے کی بات نہیں ۔۔۔۔۔ ہر کویؑ اپنے گریباں میں زرا جھانکے گا تو سمجھ سکے گا اور اس پر سبحان اللہ بھی کہے گا اس لےؑ کہ اس کو سمجھ آ گیؑ ہے لیکن جس چیز کی سمجھ نہیں آیؑ بھلے وہ کتنی ہی اچھی ہے اسکا زکر نہیں کیا جاتا میرا کہنے کا مطلب یہ کہ بی بی پاک حضرت فاطمہ زہرا سلام الله علیہا سے کس قدر محبت تھی جو ،


نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم نے ان کے سلام کا جواب دیا تھا اس کا اندازہ کویؑ تب کر سکے گا کہ جس کو اپنی بیٹی سے ازحد محبت ہو گی اور جان جاؤ لوگو کہ اس طرح کی تحریر ذندگی میں بندہ کبھی کبھار ہی لکھ پاتا ہے جو میں یہاں کہنے والا ہوں کہ جس کو بھی نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی محبت درکار ہے اس کے لےؑ ضروری ہے کہ
ان کی بیٹی بی بی پاک حضرت فاطمہ زہرا سلام الله علیہا کا ادب و احترام خوب سمجھے اور ان کے ہی بچوں کا صدقہ کا واسطہ دے کر مانگے تو ہر ممکن بات مانی جاےؑ گی اپنے آپ کو گندگی سے دور رکھے جو آج کل کے ملاؤں نے
بکھیرے ڈال رکھے ہیں کہ کون سنتا ہے اور کون نہیں سنتا ؟
میں یہاں واضح طور پر بتا رہا ہوں کہ ہمارے پیارے نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم بات سنتے ہی نہیں بلکہ سلام کا جواب بھی دیتے ہیں میں اس قابل اپنے آپکو کبھی نہیں سمجھتا کہ میں عظیم محسن انسانیت صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم جیسی ہستی کی کویؑ مثال دوں بھلا جس کی مثل اللہ پاک نے بنایؑ ہی نہیں تو مثال کہاں سے لایؑ جاےؑ گی ، جس کو بات کی سمجھ آیؑ سمجھو سر خرو ہو کر رہے گا اور جس کو سمجھ نہیں آیؑ تو اس کے نصیب پھوٹ گےؑ۔۔۔۔
دعا ہے کہ بی بی پاک حضرت فاطمہ زہرا سلام الله علیہا کی ان محبتوں کا صدقہ میرے نبی پاک صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم میرے اس لکھے کو قبول فرمایؑں اور راضی با رضا ہو جایؑں اور اللہ پاک ہم سب کے گناہ معاف فرما کر دونوں جہانوں سے سر خرو فرما دیں اور مسلمانوں کو خود بدل کر رکھ دیں ابلیس کے شر سے بچایؑں اور دونوں جہانوں کی کامیابی عطا فرمایؑں ، جہاں جہاں پر مسلامانوں کے ساتھ طلم ہو رہا ہے اس کو روکیں اور ظالمین کے طلم کو مٹا کر رکھ دیں ،
آمین ثم آمین

Poetry

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: