” ہو کیا گیا ہے “


 

 

کویؑ اعتبار نہیں کرتا کسی پہ ، ہو کیا گیا ہے

رسوا کرتی ہے میری سچایؑ اور ایمان داری ہی مجھے

گیسو خمدار دیکھنے کے لےؑ بھی ترسا دیا تم نے

سب مسیحا سمجھ گےؑ لگی ہے تری بیماری ہی مجھے

باہر نکل کے تو دیکھ زرا اپنی ذات کے درودیوار سے

کر رہی ہے نڈھال کتنا میری حالت ناداری ہی مجھے

 

nai nazam

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: