مری آنکھوں سے آتی ہے طغیانی

وہ بھی خود کو دریا کہتے ہیں جو سمجھتے ہی نہیں

سب دریاؤں میں مری آنکھوں سے آتی ہے طغیانی

 

 

Poetry

 

 

Leave a Reply