عقل والے تھے

 

عقل والے تھے  ، عمر ہی بے عقلی میں کاٹ گےؑ

بے عقل ہیں ایسے بھی جن کی اولاد صدقہؑ جاریہ ہے

 

Poetry

 

 

Leave a Reply