” دل اِدھر کا رہا بیچارا نہ اُدھر کا رہا “

 

نظر عنایت ہے جو اُلفت مورد الزام ٹھہری
اور دل اِدھر کا رہا بیچارا نہ اُدھر کا رہا

Ha dado la culpa afecto
Y no voy a los pobres aquí

 

 

morde ilzam

 

Leave a Reply