” جب بھی چاہا اٹھا کے انگلی کہہ دوں مجرم “

 

 

جب بھی چاہا اٹھا کے انگلی کہہ دوں مجرم اسے لیکن

اٹھاتا ایک ہوں تو چار میری طرف بھی اٹھ آتی ہیں

 

 

POETRY

 

 

Leave a Reply